اسرائیل فلسطینیوں کے خلاف جنگ میں ناکام ہو چکا ہے۔ ایرانی صدرابراہیم رئیسی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایرانی صدر ابراہیم رئیسی نے کہا کہ اسرائیل اور حماس کی جنگ میں اسرائیل اپنے اہداف حاصل کرنے میں ناکام رہا ہے۔ وہ جمعرات کے روز اسرائیل اور حماس کی عارضی جنگ بندی کے بارے میں بات کررہے تھے۔ ایرانی صدر نے اسرائیل اور حماس کے درمیان عارضی جنگ بندی کو فلسطینیوں کی فتح کا نام دیا ہے۔

واضح رہے اسرائیل نے سات اکتوبر سے مسلسل آج تک غزہ کی شہری آبادی کو بمباری کا اس طرح ہدف بنایا کہ بین الاقوامی قوانین کی ذرہ بھر پروا نہ کی۔ ہزاروں شہریوں کو ہلاک کیا ، ہسپتالوں کے محاصرے ہی نہیں ان کو بمباری اور ٹینکوں سے حملوں کا بھی ہدف بنایا ۔

پورے غزہ کی ناکہ بندی اب بھی جاری رکھی ہے۔ لیکن اس کے باوجود اسے حماس کے ساتھ مذاکرات کے ذریعے ہی اپنے یرغمالیوں کو چھڑوانا پڑا ہے۔

ایران کے سرکاری خبر رساں ادارے ' ارنا ' کے مطابق صدر ابراہیم رئیسی نے کہا 'صہیونی رجیم اپنا کوئی بھی ہدف حاصل نہیں کر سکی ہے، صہیونی رجیم فلسطینی مزاحمت کو ختم کرنا چاہتی تھی لیکن وہ نہ کر سکی۔'

'ارنا' کے مطابق ایرانی صدر نے مزید کہا ' اسرائیل نے اپنے جارحانہ اقدامات کے ذریعے عالمی سطح پر اپنے لیے صرف نفرت حاصل کی ہے۔ اب جبکہ جنگ بندی کا اعلان ہو چکا ہے ہم کہہ سکتے ہیں کہ فلسطینی حقیقتاً اس جنگ کے فاتح ہیں ۔'

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں