نگران وزیر خارجہ کی ایرانی ہم منصب کو فون کال، بم دھماکوں میں جانی نقصان پر تعزیت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

نگران وزیر خارجہ وزیر خارجہ جلیل عباس جیلانی نے ایرانی ہم منصب حسین امیر عبداللہیان سے قاسم سلیمانی کی چوتھی برسی پر کیے گئے دہشت گرد حملے میں تقریباً 100 افراد کی ہلاکت پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔

دفتر خارجہ سے جاری بیان کے مطابق جلیل عباس جیلانی نے جمعرات کے روز ایران کے وزیر خارجہ حسین امیر عبداللہیان سے ٹیلیفونک گفتگو کی اور گذشتہ روز کرمان میں کیے گئے دہشت گرد حملے میں تقریباً سو افراد کی ہلاکت پر گہرے دکھ اور افسوس اور تعزیت کا اظہار کیا۔

وزیر خارجہ نے دکھ کی اس گھڑی میں پاکستان کی حکومت اور عوام کی جانب سے ایرانی عوام کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا۔

جلیل عباس جیلانی نے کہا کہ دہشت گردی پاکستان اور ایران دونوں کے لیے مشترکہ خطرہ ہے جس کا موثر اقدامات کے ذریعے مقابلہ کرنے کی ضرورت ہے۔

قاسم سلیمانی 2020 میں عراق میں امریکا کی جانب سے کیے گئے ڈرون حملے میں مارے گئے تھے اور گزشتہ روز ان کی چوتھی برسی کے موقع پر ہونے والے دو بم دھماکوں میں تقریباً 100 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں