مغربی کنارے میں اسرائیلی چھاپے کے دوران ایک کم سن فلسطینی شہید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

فلسطینی وزارت صحت کے مطابق اسرائیلی فوج کی جانب سے مقبوضہ مغربی کنارے پر چھاپے کے دوران جھڑپوں کے نتیجے میں ایک 16 سالہ فلسطینی کم سن شہید ہو گیا۔

وزارت کے مطابق کم سن غیث یامین کو سر میں گولی ماری گئی اور اس کی موت ہسپتال میں جا کر واقع ہوئی۔

فلسطین کی سرکاری نیوز ایجنسی 'وفا' کے مطابق جھڑپوں کا سلسلہ اس وقت شروع ہوا جب اسرائیلی فوج کی حفاظت تلے یہودی آبادکاروں کا ایک گروپ نابلس کے مضافات میں موجود ایک مقبرے پر مذہبی رسومات کی ادائیگی کے لئے آیا۔

وفا نیوز کے مطابق اسرائیلی فائرنگ سے کم از کم 15 فلسطینی زخمی ہوگئے ۔ مزار یوسف فلسطینیوں اور اسرائیل کے درمیان تنازعے کا موجب ہے۔ یہودی اسے پیغمبر خدا حضرت یوسف کا مزار مانتے ہیں جبکہ فلسطینیوں کے مطابق یہ مزار ایک مقامی بزرگ کا ہے جن کا نام بھی یوسف تھا۔

اس سے قبل منگل کے روز اسرائیلی حکام نے دعویٰ کیا تھا کہ انہوں نے فلسطینی مزاحمتی تنظیم حماس کی جانب سے ممبر پارلیمنٹ کو گولی مارنے، فوجیوں کے اغوا اور بیت المقدس کی لائٹ ریل کو بم سے نشانہ بنانے کی سازش کو ناکام بنا دیا ہے۔

اسرائیلی پولیس اور داخلی سیکیورٹی کی تنظیم شن بیت کے مطابق مشرقی بیت المقدس سے تعلق رکھنے والے پانچ فلسطینیوں کو ان الزامات کے تحت گرفتار کر لیا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں