تین ہفتوں میں رفح سے دس لاکھ فلسطینی نقل مکانی پر مجبور : 'اونروا'

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

فلسطینی پناہ گزینوں کے لیے قائم اقوام متحدہ کے ادارے 'اونروا' نے بتایا ہے کہ گزشتہ تین ہفتوں میں رفح سے دس لاکھ فلسطینی اسرائیلی فوج کی بمباری کی وجہ سے نقل مکانی پر مجبور ہوئے ہیں۔ 'اونروا' حکام نے یہ بات منگل کے روز کہی ہے۔

اقوام متحدہ کے جائزوں کے مطابق غزہ جنگ کے دوران 15 لاکھ فلسطینیوں نے غزہ کے انتہائی جنوب میں واقع شہر رفح میں پناہ لی تھی۔

مئی کے شروع میں اسرائیلی فوج نے رفح پر حملہ کیا۔ جس کا مقصد حماس کے جنگجووں کا خاتمہ بتایا گیا تھا۔ اسرائیلی فوج نے فلسطینی پناہ گزینوں کو کہا کہ وہ رفح شہر خالی کر دیں۔ رفح سے نکلنے والے فلسطینی پناہ گزین نہیں جانتے تھے کہ ان کی اگلی منزل کیا ہوگی۔

'اونروا' حکام کے مطابق 'پناہ گزین نہیں جانتے کہ رفح سے نکل کر انہیں کہاں جانا ہے۔ ان کے پاس خوراک ہے نہ پانی۔ ان کی حالت انتہائی نازک ہے۔ فلسطینی پناہ گزینوں کی مدد و حفاظت ناممکن ہے۔'

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں