.

شمالی وزیرستان :جیٹ طیاروں کی بمباری،20 جنگجو ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان آرمی نے وفاق کے زیر انتظام قبائلی علاقے شمالی وزیرستان میں مشتبہ طالبان جنگجوؤں کے ٹھکانوں پر منگل کے روز جیٹ طیاروں سے بمباری کی ہے جس کے نتیجے میں بیس دہشت گرد ہلاک اور آٹھ زخمی ہوگئے ہیں۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری کردہ ایک مختصر بیان میں بتایا گیا ہے کہ لڑاکا طیاروں نے شمالی وزیرستان کی تحصیل دتہ خیل میں طالبان کے ٹھکانوں پر بمباری کی ہے۔تاہم بیان میں مرنے والوں کی شناخت یا مزید تفصیل نہیں بتائی گئی ہے۔

پاک آرمی جون سے شمالی وزیرستان میں کالعدم تحریک طالبان پاکستان(ٹی ٹی پی) اور دوسرے جنگجو گروپوں کے خلاف آپریشن ضربِ عضب کے نام سے بڑی کارروائی ہے۔اس دوران گذشتہ پانچ ماہ میں بارہ سو سے زیادہ مشتبہ جنگجوہلاک ہوچکے ہیں اور افغان سرحد کے نزدیک واقع شمالی وزیرستان کے نوّے فی صد علاقے کو کلئیر کر لیا گیا ہے۔

طالبان جنگجوؤں کے خلاف اس کارروائی سے قبل علاقے کے قریباً دس لاکھ افراد اپنا گھر بار چھوڑنے پر مجبور ہوگئے تھے اور وہ تب سے صوبہ خیبر پختونخوا کے ضلع بنوں میں خیمہ بستی یا پھر دوسرے علاقوں میں اپنے عزیزواقارب کے ہاں مقیم ہیں۔اب سردی میں شدت آنے کے بعد وہ اپنے گھروں کو واپسی کے منتظر ہیں۔

پاک آرمی نے شمالی وزیرستان میں پہلے جنگی طیاروں سے مشتبہ دہشت گردوں کے ٹھکانوں پر تباہ کن بمباری کی تھی ۔اس کے بعد توپ خانے کے ساتھ زمینی کارروائی شروع کی تھی۔فوجی اب گھر گھر تلاشی کے دوران دہشت گردوں کی جانب سے بچھائی گئی بارودی سرنگوں سے علاقے کو پاک کررہے ہیں۔